pep.zone
Welcome, guest. You are not logged in.
Log in or join for free!
 
Stay logged in
Forgot login details?

Login
Stay logged in

For free!
Get started!

Guestbook


qeema aur radio therapy - Newest pictures
a--------urdu.duniya.in.pep.zone

回 قیمہ اور ریڈیو تھراپی 回

طنز و مزاح



پچھلے دنوں کچھ عرصے کے لیے جنوبی پنجاب کے ایک قصبے میں اپنے ایک قریبی عزیز کے گھر رہنے کا اتفاق ہوا اور اتفاق ہی سے ان کے علاقے کا پانی ہمیں راس نہ آیا۔ پیٹ خراب تو جو ہوا سو ہوا علاج کے لیے وہ ہمیں اپنی آزمودہ ’’لال گولیاں‘‘ کھلاتے رہے۔ جو ہم تکلفاً استعمال کرتے رہے۔ فائدہ کیا ہونا تھا اُلٹا ایک رات پیٹ میں ایسا درد اُٹھا کہ ماہیٔ بے آب کی طرح تڑپنے لگے۔
کچھ دیر تو چپکے لیٹے رہے مگر جب حال سے بے حال ہوگئے تو میزبان کو جگانا پڑا۔
ہمیں تڑپتا دیکھ کر وہ نجانے کیا سمجھے جو جھلا کر بولے ’’کمال کرتے ہیں آپ بھائی صاحب! یہ ڈسکو آپ صبح دکھا دیتے مجھے، اجی! لا حول ولا قوۃ الا باللہ۔ بیکار میں نیند خراب کی۔‘‘ ہم نے منمنا کر درد کا ذکر کیا۔ انھوں نے وہ لال گولی ہمیں کھلا دی اور اس گولی کا کھانا ہی تو غضب ہوگیا گہرے سبز رنگ کی قےَ ہمارے منہ سے فوارے کی طرح نکلی اور ان کی سفید قمیص کو داغ دار کر گئی۔ اب انھیں حالت کی سنگینی کا احساس ہوا اور انھوں نے اپنے پڑوسی کے بیٹے اسلم کو جو طب کی تعلیم حاصل کر رہا ہے بُلا لیا۔ برخودار نے اچھی طرح ٹھونک بجا کر ہمارا پیٹ دیکھا اور اعلان کیا کہ انکل کو اسپتال لے جانا ہوگا۔

اسپتال کی حالت دیکھ کر ہمارے رہے سہے اوسان بھی جاتے رہے۔ دو کمروں کا چھوٹا سا مکان۔ دیواروں پر دراڑیں ہی دراڑیں، چھت پر جالے ہی جالے اور فرش پر مٹی ہی مٹی۔ اندر میلے کچیلے بستر پر پڑے اکلوتے مریض نے آنکھوں آنکھوں میں اشارے شروع کر دیے کہ پتلی گلی سے نکل لے بچہ! ورنہ تیرا بھی یہی حال ہوگا۔ ہم نے اپنے تیماردار کی طرف دیکھا۔ وہ وہاں چپراسی نما مخلوق کو جگانے کی کوشش کر رہے تھے جس کے دہشت ناک خراٹوں کی آواز سے دل کانپ رہا تھا۔ خدا خدا کر کے وہ جاگا۔
پھر ڈاکٹر صاحب کو جگانے کا مرحلہ آیا۔ آخر وہ بھی طے ہوا۔ شکل صورت تو اللہ کی بنائی ہوتی ہے اس پر کیا تبصرہ کرنا البتہ کھچڑی بال رگڑ رگڑ کر بنائی گئی شیو اور جلدی میں چڑھائی گئی پھنسی ہوئی پتلون اور کسَی ہوئی ٹائی نے ان کا حُلیہ مضحکہ خیز بنا دیا تھا۔ اس پر مستزاد وہ بجائے مسکراہٹ کے چہرے پر بارہ بجائے تشریف لے آئے۔ گھڑی کو دیکھا تو بھی بارہ ہی بجے تھے۔ جی میں آیا کہ ان سے پوچھوں کہ اتنا درست وقت کیسے بجا رہے ہیں مگر ہمارے ...


This page:




Help/FAQ | Terms | Imprint
Home People Pictures Videos Sites Blogs Chat
Top
.